پاکستان بجٹ خسارہ، نوٹ چھاپے جانے کا امکان: وال اسٹریٹ جرنل

Posted by on Jun 03, 2011 | Comments Off on پاکستان بجٹ خسارہ، نوٹ چھاپے جانے کا امکان: وال اسٹریٹ جرنل

وال اسٹریٹ جرنل کی رپورٹ ہے کہ پاکستان کے اگلے سال کیبجٹ کی آمد آمد ہے اور تشویش یہ ہے کہ حکومت بجٹ خسارہ پورا کرنے کے لیے امیروں پر ٹیکس لگا کر آمدنی میں اضافہ کرنے کے بجائے نوٹ چھاپنے پر تکیہ کرے گی،  جِس کی وجہ سے افراطِ زر میں اضافہ ہو رہا ہے اور معیشت روزگار کے کافی مواقع پیدا نہیں کر رہی ہے۔

اخبار کہتا ہے کہ عالمی بینک نے پچھلے سال سے پاکستان کو ساڑھے تین ارب ڈالر کی ادائگی روک رکھی ہے، جوپاکستان کے لیے 11.3ارب ڈالر کی آخری قسط ہے۔وجہ اِس کی یہ ہے کہ پاکستان نے اپنے بجٹ خسارے کو کم کرنے کیلیے سخت قدم نہیں اٹھائے۔

عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک نے بھی بجٹ کی امداد کی مد میں ایک ارب ڈالر کی رقم روک رکھی ہے۔

اخبار کہتا ہے کہ پاکستان نے نہایت امیر لوگوں پر ٹیکس نہ لگا کر قرضوں پر تکیہ کر رکھا ہے۔ اِس کی بجٹ کا ایک چوتھائی پرانے قرضوں پر سود ادا کرنے پر خرچ ہوجاتا ہے، جِس کیمعنی یہ ہیں کہ صحتِ عامہ اور تعلیم کیلیے تھوڑی رقم دستیاب ہے۔

حکومت نے بجٹ خسارہ پورا کرنے کے لیے نوٹ چھاپنے پر تکیہ کر رکھا ہے۔ رواں مالی سال  کیلیے اس کا تخمینہ مجوعی قومی پیداوار کا چھ فی صد ہے۔ ایسا کرنے سے حکومت نے افراطِ زر کو 13فی صد تک بڑھنے دیا ہے۔ اِس سے پیدا شدہ صورتِ حال کی وجہ سے نجی کاروباری طبقے کو بینک قرضے حاصل کرنے میں  مشکل آتی ہے۔

بیرونی سرمایہ کار پہلے ہی پاکستان کی سکیورٹی کی صورتِ حال کی وجہ سے ہچکچاہٹ میں مبتلہ ہیں اور کم و بیش ادھر کا رخ نہیں کرتے۔ نتیجتا، ملک کی شرحِ نمو سکڑ رہی ہے۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here