پاکستان ایران گیس پائپ لائن کے منصوبے پر سروے کا کام نو مئی سے جاری ہے۔وفاقی وزیر پیٹرولیم اور قدرتی وسائل

Posted by on Jul 04, 2011 | Comments Off on پاکستان ایران گیس پائپ لائن کے منصوبے پر سروے کا کام نو مئی سے جاری ہے۔وفاقی وزیر پیٹرولیم اور قدرتی وسائل

وفاقی وزیر پیٹرولیم اور قدرتی وسائل ڈاکٹر عاصم حسین نے کہا ہے کہ پاکستان ایران گیس پائپ لائن کے منصوبے پر سروے کا کام نو مئی سے جاری ہے اور اس منصوبے پر تعمیراتی کام چھ مہینے میں شروع کر دیا جائے گا۔
بی بی سی کے کو دیے گئے خصوصی انٹرویو میں ڈاکٹر عاصم حسین نے کہا کہ ایران پاکستان گیس پائپ لائن منصوبے پر کام سنہ دو ہزار چودہ تک مکمل کر لیا جائے گا۔ یاد رہے کہ اس منصوبے پر امریکہ متعدد بار اپنے تحفظات اعلی ترین سطح پر ظاہر کر چکا ہے۔
امریکہ کی جانب سے ہونے والے اعتراض کے بارے میں ایک سوال پر انھوں نے کہا کہ وزیر اعظم اور وزیر خارجہ کی سطح پر اس مسئلہ کا حل ڈھونڈنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔
یاد رہے کہ بھارت بھی اس منصوبے میں دلچسپی رکھتا تھا اور اس گیس پائپ لائن کو براستہ پاکستان بھارت تک لے جانے کی تجویز تھی لیکن امریکی دبا میں بھارت نے اس منصوبے سے علیحدگی اختیار کر لی تھی۔
پاکستان کو درپیش توانائی کے بحران کے حوالے سے سوالات کا جواب دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ موجودہ حکومت انرجی پالیسی پر کا کام کر رہی ہے اور اس کا جلد اعلان کر دیا جائے گا۔
وزیر پیٹرولیم نے پاکستان کے توانی کے بحران کو تشویش ناک قرار نہیں دیا اور اس امید کا اظہار کیا کہ اگلے سال جون تک اس بحران پر بڑی حد تک قابو پالیا جائے گا۔
انھوں نے کہا کہ حکومت توانائی کے بحران پر قابو پانے کے لیے جنگی بنیادوں پر کام کر رہی ہے اور کابینہ کی کمیٹی نے ایک روز قبل ہی کوہالہ کے مقام پر دریا کہ بھا پر گیارہ سو میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کے منصوبے کی منظوری دی ہے اس کے علاوہ اوچ میں گیس سے پانچ سو میگاواٹ بجلی کے منصوبے کو بھی منظور کر لیا گیا ہے۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here