سٹراس کان, جنسی سکنیڈ ل کیس کا رُخ بدل گیا

Posted by on Jul 01, 2011 | Comments Off on سٹراس کان, جنسی سکنیڈ ل کیس کا رُخ بدل گیا

قانون نافذ کرنے والے حکام نے امریکی ذرائع ابلاغ کو بتایا ہے کہ چودہ مئی کو اس واقعے کے ہونے کے بعد سے ہی الزام لگانے والی خاتون مسلسل جھوٹ بولتی رہی ہیں۔اطلاعات ہیں کہ عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف کے سابق سربراہ ڈومینک سٹراس کان کے خلاف جنسی زیادتی کا مقدمہ متاثرہ خاتون کے باربار بیانات بدلنے کی وجہ سے کمزور پڑ گیا ہے۔امریکی حکام کا کہنا ہے کہ گنی سے تعلق رکھنے والی ہوٹل ملازمہ نے امریکہ میں پناہ حاصل کے لیے اپنی درخواست میں بھی دروغ گوئی سے کام لیا تھا۔
فرانس کے سابق سوشلسٹ وزیر اعظم لیونل جوسپیں نے تازہ پیش روفت کو دھماکہ خیز قرار دیا ہے۔ امریکہ کے عدالتی نظام کے بارے میں بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ انہیں بھیڑیوں کے آگے ڈال دیا گیا تھا۔
جمعہ کے روز امریکی عدالت میں اس معاملے کی سماعت ہونی ہے اور امکان ہے کہ مسٹر سٹراس کان کے وکلا ان کی ضمانت کی شرائط میں نرمی کی درخواست کریں گے۔
امریکی ذرائع ابلاغ کی اطلاعات کے مطابق سرکاری وکلا جمعہ کے روز کی سماعت میں بتیس سالہ ملازمہ کی ساکھ کے متعلق اپنی تشویش سے جج کو آگاہ کریں گے۔

اس الزام سے سٹراس کان کی سیاسی ساکھ متاثر ہوئی ہے
نیو یارک ٹائمز کے مطابق فورینزک رپورٹ سے تو اس خاتون اور سٹراس کان کے درمیان جنسی عمل کے واضح شواہد ملے ہیں لیکن سرکاری وکلا کو ان باتوں پریقین نہیں ہے جو ہوٹل ملازمہ نے اپنے بارے میں یا اس وقت کے حالات کے متعلق بیان کی ہیں۔
اخبار کے مطابق ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ مذکورہ خاتون نے پناہ کے لیے اپنی درخواست میں بھی مستقل موقف اختیار نہیں کیا ہے۔
خاتون ملازمہ کا تعلق مغربی افریقی ملک گِنی سے ہے۔ انہوں نے الزام لگایا تھا کہ سٹراس کان نیویارک کے سافٹل ہوٹل کے اپنے کمرے میں انہیں صفائی کرنے کے بہانے سے اندر لیگئے تھے۔
مسٹر کان کے وکلا نے یہ بات تسلیم کی ہے کہ کمرے میں جنسی عمل ہوا لیکن یہ رضامندی سے ہوا اور جنسی زیادتی نہیں کی گئی تھی۔
انہیں الزامات کے بعد انہیں گرفتار کیا گیا تھا اور نیو یارک کی عدالت میں مقدمہ درج ہوا۔ عدالت کی طرف سے ریمانڈ پر بھیجنیکے بعد ڈومینک سٹراس کان نے آئی ایم ایف کے سربراہ کے عہدے سے استعفی دے دیا تھا۔
آئی ایم ایف کے سابق سربراہ پر مجرمانہ جنسی حملے، جنسی زیادتی کی کوشش اور حبسِ بے جا میں رکھنے کے الزامات کے تحت فردِ جرم عائد کی گئی تھی۔
باسٹھ سالہ سٹراس کو امریکہ کے جان ایف کینیڈی ہوائی اڈے پر ائر فرانس کے طیارے سے اتار کر حراست میں لیا گیا تھا۔ مذکورہ ملازمہ سات سال پہلے نقل مکانی کر کے امریکہ آئی تھیں اور گزشتہ سات سال سے اپنی نوجوان بہن کے ساتھ رہائش پذیر ہیں۔
فرانس کیسابق وزیرِ خزانہ ڈومینیک سٹراس کان نے ہوٹل کی ملازمہ پر جنسی حملہ کرنے کے الزام کی تردید کی تھی۔
ڈومینیک سٹراس کان فرانس کے سابق وزیرِ خزانہ اور فرانس کے ممتاز سوشلسٹ سیاست دان بھی ہیں جنہیں اس واقعے سے قبل ملک کی صدارت کے لیے ایک ممکنہ امیدوار کے طور پر دیکھا جا رہا تھا۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here