بڑی توند والے اہلکار تھانے تک محدود

Posted by on Sep 05, 2012 | Comments Off on بڑی توند والے اہلکار تھانے تک محدود

پاکستان کے صوبہ پنجاب میں پولیس کے سربراہ حبیب الرحمان نے بڑی توند والے پولیس افسروں اور اہلکاروں کو کمر کم نہ کرنے کی پاداش میں آپریشنل ڈیوٹی سے ہٹانے کا حکم دیا ہے۔

آئی جی پولیس پنجاب کے احکامات کے تحت پولیس عملے کی کمر اڑتیس انچ سے زیادہ نہیں ہونی چاہیے۔

یہ فیصلہ پنجاب میں امن وامان کے حوالے سے ہونے والے ایک اجلاس میں کیا گیا جس کی صدارت آئی جی یعنی انسپیکٹر جنرل آف پولیس نے کی۔

نامہ نگار عباد الحق کے مطابق آئی جی پنجاب نے جون میں صوبے کے تمام پولیس افسروں اور اہلکاروں کو ایک ماہ کی مہلت دیتے ہوئے حکم دیا تھا کہ وہ اپنی توند کم کریں۔

آئی جی کے احکامات کے بعد صوبے بھر میں متعدد پولیس افسروں اور اہلکاروں نے پارکوں اور جِم کا رخ کیا تھا۔

آئی جی پولیس پنجاب حبیب الرحمان نے ہدایت کی کہ بڑی توند والے پولیس اہلکاروں سے آپریشنل ڈیوٹی واپس لے لی جائے ان اہلکاروں کی جگہ چاق و چوبند اہلکاروں تعینات کیا جائے۔

ایک ماہ کی مدت پوری ہونے پہلے ہی انسپیکٹر جنرل حبیب الرحمان نے پولیس افسروں اور اہلکاروں کو توند کم کرنے کے لیے مزید مہلت دی اور بعد میں رمضان شروع ہونے کے باعث تمام اہلکاروں کو غیر معینہ مدت کے لیے چھوٹ دی گئی تھی۔

رمضان اور عید کے بعد انسپیکٹر جنرل پولیس پنجاب حبیب الرحمان نے دوبارہ پولیس افسروں اور اہلکاروں کی بڑی توند کا نوٹس لیا۔

پنجاب پولیس میں تقریباً ایک لاکھ پچھتر ہزار اہلکار ہیں جو صوبے بھر میں اپنی ذمہ داری سر انجام دے رہے ہیں۔

آئی جی حبیب الرحمان نے ہدایت کی کہ جن پولیس افسروں اور اہلکاروں کی کمر اڑتیس انچ سے کم ہو انہیں دوبارہ آپریشنل ڈیوٹی دے دی جائے۔

پنجاب کے آئی جی کے نئے احکامات کے بعد اب پولیس افسروں اور اہلکاروں کو پھر سے پارکوں اور جم کا رخ کرنے پڑے گا تاکہ وہ اپنی بڑی توند کو کم کرکے دوبارہ آپریشنل ڈیوٹی پر آسکیں۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here