بریٹ لی بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائر

Posted by on Jul 15, 2012 | Comments Off on بریٹ لی بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائر

آسٹریلیا کے تیز بولر بریٹ نے بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائر ہونے کا اعلان کیا ہے۔

پینتیس سالہ کرکٹر کے پنڈلی کے مسل میں انگلینڈ کے حالیہ ایک روزہ میچوں کے دورے کے دوران تکلیف ہو گئی تھی۔

بریٹ لی نے فروری دو ہزار دس میں ٹیسٹ کرکٹ کو خیر آباد کہہ دیا تھا اور اس کے بعد ایک روزہ میچوں سے بھی ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا۔ انہوں نے دو سو اکیس ایک روزہ میچوں میں تیئس اعشاریہ چھتیس کی اوسط سے تین سو اسی وکٹیں حاصل کی ہیں۔ وہ گلین میگرا کے کسی بھی آسٹریلین کے ایک روزہ میچوں میں زیادہ وکٹیں حاصل کرنے کے ریکارڈ سے ایک وکٹ پیچھے ہیں۔

بریٹ لی کہتے ہیں کہ ’آپ زندگی کے پوائنٹ پر پہنچ جاتے ہیں جہاں آپ کہتے ہیں بس اب بہت ہو گیا۔‘

اپنے کیریئر کے عروج پر بریٹ لی دنیا کے سب سے بہترین فاسٹ بولر تھے۔ انہوں نے 2005 میں نیوزی لینڈ کے خلاف نیپیئر کے میدان میں کرکٹ کی رقم شدہ تاریخ کی دوسری تیز ترین گیند کی جو کہ 99.9 میل فی گھنٹہ تھی۔

’میں نے گزشتہ دو تین راتوں اس کے متعلق بہت سوچا۔ آج میں جب صبح سو کر اٹھا تو میں نے محسوس کیا کہ میں اس کے لیے تیار ہوں۔‘

انہوں نے آسٹریلیا کے چینل 9 کو بتایا کہ ’ٹیم کے ماحول میں آپ کی دماغی اور جسمانی طور پر سو فیصد شمولیت ہونی چاہیئے۔‘

’میرے خیال میں، جب میں گزشتہ چند ماہ پر نظر ڈالتا ہوں، تو میرے اندر وہ خواہش نہیں رہی۔ یہ نہ میرے لیے نہ میری ٹیم کے لیے مناسب ہو گا کہ میں اسی رویے سے کھیلتا رہوں۔‘

نیو ساؤتھ ویلز کے شہر ولونگونگ میں پیدا ہونے والے بریٹ لی نے 1999 میں انڈیا کے خلاف ٹیسٹ کرکٹ کا آغاز کیا اور اپنے پہلے ہی ٹیسٹ میں 47 رنز دے کر 5 کھلاڑی آؤٹ کیے۔

انہوں نے 76 ٹیسٹ میچوں میں 30.81 کی اوسط سے 310 وکٹ حاصل کیے اور 221 ایک روزہ میچوں میں 23.36 کی اوسط سے 380 وکٹ حاصل کیے۔

انگلینڈ کے سابق کپتان مائیکل وان اپنے ٹویٹ میں بریٹ لی کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے زبردست کیریئر پر مبارکباد دی۔ انہوں نے لکھا کہ ’کہنا چاہتا ہوں کہ آپ کے خلاف کھیلنا بہت زبردست تھا لیکن زیادہ تر تو ڈر ہی لگتا تھا۔‘

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here