ایم کیو ایم کی بھی ذمہ داری ہے

Posted by on Jun 08, 2012 | Comments Off on ایم کیو ایم کی بھی ذمہ داری ہے

پاکستان کے صوبۂ سندھ کے وزیر اعلیٰ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ مخلوط حکومت کا حصہ ہے اور کراچی میں امن و امان بہتر کرنے میں اس کی بھی اتنی ہی ذمہ داری ہے جتنی حکومت کی ہے۔

وزیراعلیٰ قائم علی شاہ نے کہا کہ دو دن پہلے ان کی ڈی جی رینجرز سے بات ہوئی تھی اور ان سے کہا تھا کہ جرائم کو ختم کرنا حکومت کا مقصد ہے اور ہمارا یہ ہی عزم ہے اور اس سلسلے میں تمام موجودہ وسائل کو بروئے کار لایا جائے گا۔

وزیراعلٰی سندھ نے کہا ’احتجاج کرنا ان (ایم کیو ایم) کا حق ہے لیکن وہ ہمارے اتحادی ہیں، ہم ان کی عزت کرتے ہیں اور ہمارے دوست ان کو منا کر لے آئے ہیں۔ میں ایک بات کروں گا کہ جب ہم پارٹنر ہیں کسی چیز میں تو ہم سب کی برابر کی ڈیوٹی ہے۔ ہم سب کی ذمہ داری ہے جو کہ میں نے ان سے بھی کئی بار کہا ہے اور آج بھی کہتا ہے کہ ہم سب ایک کشتی میں سوار ہیں۔‘

’اس میں جو بھی نقائص ہیں ان کو دور کرنا چاہیے اور جو ضابطے ہیں ان پر ضرور عمل کریں تاہم میں نے سزا اور جزا کے عمل پر زور دیا ہے۔ جہاں کسی سے اپنے فرض میں کوتاہی ہوئی تو اس پر سرزنش ہوگی۔ کسی جرائم پیشہ فرد سے ڈرنا نہیں چاہیے اور یہ پولیس کی ڈیوٹی ہے کہ جرائم پیشہ افراد کو قانون کے شکنجے میں لائے۔‘

انہوں نے کہا کہ اجلاس کے دوران جو کوتاہیاں تھیں بتائی گئیں اور حکومت نے پولیس کو ایک سمت دے دی ہے اور جو اس پر نہیں چل سکتا ان کو سائڈ لائن کردیا جائے گا یا قبل از وقت ریٹائر کردیا جائے گا۔

وزیرِ اعلٰی نے کہا ’میں اپنی ذمہ داری محسوس کرتا ہوں کیونکہ یہ میری ذمہ داری ہے۔ میں کوشش کروں گا کہ عوام کے اعتماد پر پورا اتروں۔‘

قائم علی شاہ نے اس سوال کو نظرانداز کر دیا کہ کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے پیچھے کون سے عناصر ملوث ہیں۔ تاہم انہوں نے کہا کہ کئی افراد لیاری سے گرفتار ہوئے ہیں۔ ان میں سے کچھ نے جو اعتراف کیا ہے ان کو پریس کے سامنے ثبوت کے ساتھ پیش کیا جائے گا۔

’آئے دن کے واقعات کو مؤثر انداز میں روکنا ہے، میں چاہتا ہوں کہ ڈی آئی جی اور آئی جی بھی میدان میں ہوں۔ اور امید ہے کہ بہتری آئے گی۔ یہ میں نہیں کہتا کہ بارہ گھنٹے یا چوبیس گھنٹے میں بہتری ہوگی لیکن عوام نمایاں بہتری دیکھیں گے۔‘

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here