اہم شدت پسند رہنما ڈرون حملے میں ہلاک؟

Posted by on Jun 04, 2011 | Comments Off on اہم شدت پسند رہنما ڈرون حملے میں ہلاک؟

پاکستان کے قبائلی علاقے جنوبی وزیرستان میں حکام کے مطابق امریکی جاسوس طیارے کے ایک حملے میں نو شدت پسند ہلاک جبکہ تین زخمی ہوگئے ہیں۔ مقامی لوگوں کے مطابق حملے میں الیاس کشمیری بھی ماراگیا ہے۔

ایک سرکاری اہلکار نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ انہیں بھی ڈرون حملے میں الیاس کشمیری کی ہلاکت کی اطلاعات ملی ہیں لیکن وہ ابھی تک ان خبروں کی تصدیق نہیں کر سکتے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے یف پی نے ایک سرکاری اہلکار کے حوالے سے بتایا ہے کہ امریکی جاسوسی طیارے کے حملے کا نشانہ الیاس کشمیری تھے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ وہ اس بات کی تصدیق نہیں کر سکتے کہ وہ وہاں پر موجود تھے یا نہیں۔

القاعدہ سے منسلک شدت پسند تنظیم حرکت الجہاد الاسلامی کے رہنما الیاس کشمیری کو کراچی میں مہران نیول بیس پر ہونے والے دہشت گردی حملے کا ماسٹر مائنڈ قرار دیا جاتا رہا ہے۔

امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ حرکت الجہاد الاسلامی کو ہندوستان اور پاکستان میں ہونے والی کئی دہشت گرد حملوں کا ذمہ دار گردانتا ہے جن میں سن دو ہزار چھ میں کراچی میں امریکی قونصل خانے پر ہونے والا حملہ بھی شامل ہے جس میں چار افراد ہلاک ہوئے تھے۔ فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکہ نے سینتالیس سالہ الیاس کشمیری کے سر کی قیمیت پچاس لاکھ ڈالر مقرر کر رکھی ہے۔

امریکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کی ایک رپورٹ کے مطابق امریکہ اور پاکستان مشترکہ انٹیلیجنس ٹیم بنا کر جن پانچ شدت پسندوں کو نشانہ بنانا چاہتے ہیں ان میں القاعدہ کے رہنما ایمن الظواہری، عطیہ عبدالرحمن، طالبان رہنماں ملا عمر اور سراج حقانی کے ساتھ الیاس کشمیری کا نام بھی شامل ہے۔

سرکاری اہلکار کے مطابق جمعہ اور سنیچر کی درمیانی رات وانا بازار سے تقریبا بیس کلومیٹر دور جنوب مشرق کی جانب غواخواہ کے علاقے لمن میں ایک امریکی جاسوس طیارے سے مسلح شدت پسندوں کے ایک گروہ کو اس وقت نشانہ بنایا گیا جب وہ ایک سیب کے باغ میں چائے پی رہے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ حملے میں نو افراد ہلاک جبکہ تین زخمی بتائے جاتے ہیں۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here