امریکی باکسر کی آمدن سب سے زیادہ

Posted by on Jun 20, 2012 | Comments Off on امریکی باکسر کی آمدن سب سے زیادہ

عالمی کاروباری جریدے ’فوربز‘ نے ان سو کھلاڑیوں کی فہرست شائع کی ہے جنہوں نےگزشتہ سال سب سے زیادہ کمائی کی ہے۔

اس فہرست میں پہلا نام امریکی باکسر فلائیڈ مے ویدر کا ہے جنہوں نے ساڑھے آٹھ کروڑ ڈالر کمائے۔ وہ آج کل گھریلو تشدد کے الزام میں وہ تین ماہ جیل کی سزا کاٹ رہے ہیں۔

دوسرے نمبر پر بھی ایک اور باکسر میني پیكيو ہیں جنہوں نے چھ کروڑ بیس لاکھ ڈالر کمائے۔

دو ہزار ایک کے بعد سے اب تک سرفہرست رہنے والے گولف کے سابق نمبر ایک امریکی کھلاڑی ٹائیگر وڈز اب پانچ کروڑ 94 لاکھ ڈالر کی کمائی کے ساتھ تیسرے نمبر پر آ گئے ہیں۔ ان کی آمدن میں کمی کی وجہ سیکس سکینڈل کے بعد سے ان کی اشتہاری ذرائع سے ہونے والی آمدنی میں کمی بتائی جاتی ہے۔

ٹینس سٹار راجر فیڈرر نے گزشتہ برس پانچ کروڑ ستائیس لاکھ ڈالر کمائے اور انہیں اس لسٹ میں پانچواں نمبر ملا ہے۔

انگلش فٹبالر ڈیوڈ بیکہم کو آٹھواں مقام حاصل ہوا ہے۔ وہ فٹ بال کھلاڑیوں میں وہ سب سے زیادہ چار کروڑ ساٹھ لاکھ کمانے والے کھلاڑی ہیں۔ سب سے زیادہ کمائی کرنے والے سو کھلاڑیوں میں سے تیس کا تعلق فٹ بال کے کھیل سے ہے۔

شراپووا نے گزشتہ برس کافی انعامي رقم جیتی ہے

بھارتی کھلاڑیوں کی بات کریں تو مہندر سنگھ دھونی اس فہرست میں اکتیسویں اور سچن تندولکر اٹھہترویں نمبر پر ہیں۔ اولمپک چیمپئن ایتھلیٹ یوسین بولٹ بھی اس فہرست میں کافی نیچے ہیں اور دو کروڑ تین لاکھ ڈالر کی کمائی کے ساتھ انہیں تریسٹھواں درجہ حاصل ہوا ہے۔

فوربز کی فہرست میں صرف دو خواتین روس کی ٹینس کھلاڑی مريا شراپووا اور چین کی ٹینس کھلاڑی لی نا شامل ہیں۔ شراپووا نے گزشتہ برس کافی انعامي رقم جیتی ہے اور اس کے علاوہ وہ کئی کمپنیوں کے اشتہار بھی کر رہی ہیں۔ دو کروڑ اناسی لاکھ ڈالر کی کمائی کے ساتھ انہوں نے فہرست میں چھبیسواں واں نمبر حاصل کیا ہے جبکہ لی نا ایک کروڑ چوراسی لاکھ ڈالر کے ساتھ اکیاسیویں نمبر پر رہیں۔

فوربز میگزین کھلاڑیوں کی کل آمدنی میں ان کی تنخواہ، بونس، انعامي رقم، تقریبات میں جانے کی فیس، اشتہار اور لائسنس سے ہونے والی کمائی شامل کی جاتی ہے اور اس میں ٹیكس یا ایجنٹ کی فیس منہا نہیں کی جاتی۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here