امریکہ صرف ناکامی میں پاکستان کو شریک بناتا ہے کامیابی میں نہیں۔وزیرِ اعظم پاکستان یوسف رضا گیلانی

Posted by on Jul 05, 2011 | Comments Off on امریکہ صرف ناکامی میں پاکستان کو شریک بناتا ہے کامیابی میں نہیں۔وزیرِ اعظم پاکستان یوسف رضا گیلانی

وزیرِ اعظم پاکستان یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ کامیابی کی صورت میں امریکہ پاکستان کی شراکت نہیں چاہتا لیکن ناکامی میں شراکت دار بنا لیتا ہے۔
یہ بات انہوں نے بی بی سی کو دیے گیے ایک خصوصی انٹرویو میں کہی۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان کے شہر ایبٹ آباد میں القاعدہ کے سربراہ کو ہلاک کرنے کے لیے کی گئی یکطرفہ کارروائی پر تحفظات ہیں۔
واضح رہے کہ دو مئی کو ایبٹ آباد کے ایک مکان میں امریکی فوج کی یکطرفہ چھاپہ مار کارروائی کے دوران القاعدہ کے سربراہ اسامہ بن لادن ہلاک ہوگئے تھے۔
انہوں نے کہا کہ اسامہ بن لادن کو اتنے عرصے سے نہ ڈھونڈ سکنا صرف پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی ہی کی ناکامی نہیں ہے بلکہ پوری دنیا کی ایجنسیوں کی ناکامی ہے۔
برطانوی اخبار گارڈیئن کو دیے گئے ایک انٹرویو میں وزیرِ اعظم نے کہا کہ انہیں امریکہ نے یقین دہانی کرائی ہے کہ آئندہ ایبٹ آباد واقعہ جیسی یکطرفہ کارروائی نہیں ہوگی۔
وزیراعظم نے امریکی صدر براک اوباما اور دیگر اعلی امریکی عہدیداروں کے بیانات کو رد کیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ضرورت پڑنے پر القاعدہ کے رہنماں کے خلاف دوبارہ یکطرفہ کارروائی کی جائے گی۔
ایک اور یکطرفہ کارروائی نہ صرف دونوں ممالک کے تعلقات کو زک پہنچائے گی بلکہ یہ شدت پسندوں کے خلاف جنگ میں ہمارے مشترکہ مقصد کو بھی نقصان پہنچائیگی۔ ہم جنگ لڑ رہے ہیں اور اگر ہم ناکام ہوتے ہیں تو اس کا مطلب ہے کہ یہ دنیا کے لیے اچھا نہیں۔ ہم شکست برداشت نہیں کر سکتےوزیراعظم گیلانیجب ہم امریکہ کے ساتھ معلومات کا تبادلہ کررہے تھے اور سی آئی اے اور آئی ایس آئی کے درمیان بہترین تعلقات موجود تھے تو ایبٹ آباد کی کارروائی بھی مشترکہ ہو سکتی تھی تاہم ایسا نہیں ہوا، لہذا ہمیں اس بابت کئی تحفظات ہیں۔
انہوں نے کہا انہوں (امریکہ) نے ہمیں یقین دہانی کرائی ہے کہ مستقبل میں پاکستانی سرزمین پر ایسی کوئی یکطرفہ کارروائی نہیں ہوگی اور دونوں ملکوں کی خفیہ ایجنسیاں ایک دوسرے سے تعاون کریں گی۔
وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ یہ یقین دہانی انہیں امریکی وزیرِ خارجہ ہلری کلنٹن سے ذاتی طور پر موصول ہوئی ہے۔ تاہم اپنے عام بیانات میں ہلری کلنٹن نے اعلان کیا ہے کہ اگر کسی اور نے اہم شدت پسندوں کے خلاف کارروائی نہیں کی تو امریکہ یکطرفہ کارروائی کرے گا۔
گارڈیئن اخبار کے مطابق، جمعرات کو یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ ایبٹ آباد جیسے واقعہ کا اعادہ قطعی طور پر ناقابلِ قبول ہوگا۔

امریکہ یکطرفہ کارروائی کرے گا: ہیلری کلنٹن
انہوں نے کہا اس سے امریکہ کے خلاف عوامی رائے مزید خراب ہوگی اور آپ عوامی حمایت کے بغیر جنگ نہیں لڑ سکتے۔ شدت پسندوں کے خلاف فوجی کارروائی کے لیے عوامی حمایت کی ضرورت ہوتی ہے۔
ان کے بقول ایک اور یکطرفہ کارروائی نہ صرف دونوں ممالک کے تعلقات کو زک پہنچائے گی بلکہ یہ شدت پسندوں کے خلاف جنگ میں ہمارے مشترکہ مقصد کو بھی نقصان پہنچائیگی۔ ہم جنگ لڑ رہے ہیں اور اگر ہم ناکام ہوتے ہیں تو اس کا مطلب ہے کہ یہ دنیا کے لیے اچھا نہیں۔ ہم شکست برداشت نہیں کر سکتے۔
ایبٹ آباد کے واقعہ کے بعد پاکستانی حکومت نے کہا تھا کہ اس نے شدت پسندوں پر حملے کرنے کے لیے استعمال ہونے والے امریکی ڈرون طیاروں کو اپنی سرزمین دینا بند کردی ہے۔ تاہم افغانستان کے سرحدی علاقے سے پاکستان میں شدت پسندوں کے خلاف امریکی ڈرون حملے جاری ہیں۔
پاکستانی وزیراعظم نے کہا ہم اپنے اڈوں کو استعمال کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ ان کے پاس اور بھی اڈے ہیں، انہیں استعمال کریں۔ جب ان سے سوال کیا گیا کہ وہ اڈے کہاں ہیں، ان کا جواب تھا میرے علم میں نہیں ہیں۔ یہ آپ امریکیوں سے پوچھیں۔ یہ سوال ان سے متعلق ہے۔
انہوں نے کہا ڈرون طیاروں سے کیے جانے والے حملے ہماری حکمتِ عملی کے بھی خلاف ہیں کیونکہ ہم شدت پسندوں کو آبادی سے جدا کررہے ہیں لیکن جب ڈرون سے حملے کیے جاتے ہیں تو وہ پھر (پناہ حاصل کرنے) آبادیوں میں آجاتے ہیں۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here