’اب نیٹو سپلائی کے راستے پر لانگ مارچ ہوگا‘

Posted by on Jul 10, 2012 | Comments Off on ’اب نیٹو سپلائی کے راستے پر لانگ مارچ ہوگا‘

پاکستان میں مذہبی جماعتوں کے اتحاد دفاعِ پاکستان کونسل نے حکومت کی جانب سے نیٹو سپلائی بحال کرنے کےخلاف لاہور سے اسلام آباد تک لانگ مارچ کی تکمیل کے بعد اب نیٹو سپلائی کے راستوں پر لانگ مارچ کا اعلان کیا ہے۔

دفاع پاکستان کونسل کا لانگ مارچ پیر کو رات گئے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد پہنچا جہاں پارلیمان کے قریب دھرنے کے بعد اتحاد کے رہنماؤں نے اس کے خاتمے کا اعلان کر دیا

اسلام آباد میں مارچ کے اختتام پر خطاب کرتے ہوئے دفاعِ پاکستان کونسل کے سربراہ مولانا سمیع الحق نے اعلان کیا کہ اب نیٹو کو جن راستوں سے رسد بھیجی جاتی ہے وہاں لانگ مارچ کیا جائے گا۔

اس سے پہلے وزیراعظم کے مشیر داخلہ رحمان ملک نے اسلام آباد میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اس بات کو یقینی بنانے کی کوشش کریں گے کہ اس لانگ مارچ میں کسی شدت پسند یا کالعدم تنظیم کے افراد شامل نہ ہوں۔

انہوں نے بتایا کہ دفاعِ پاکستان کونسل اب تیرہ اور چودہ جولائی کو کوئٹہ سے چمن اور سولہ اور سترہ جولائی کو پشاور سے طورخم تک لانگ مارچ کرے گی۔

اس موقع پر حفاظتی اقدامات کے لیے پولیس کے اہلکاروں کی ایک بڑی تعداد بھی لانگ مارچ کرنے والوں کے ساتھ موجود رہی۔

نامہ نگار ذوالفقار علی کے مطابق لانگ مارچ میں کالعدم مذہبی جماعتوں کے رہنما اور کارکن شریک ہوئے اور کالعدم جماعت الدعوۃ، حرکت المجاہدین کے جھنڈے بڑی تعداد میں لہرائے جاتے رہے۔

اس لانگ مارچ میں ہزاروں کی تعداد میں افراد نے شرکت کی اور موٹر سائیکلوں، مسافر بسوں اور ٹرکوں پر سوار بڑی تعداد میں لوگ اسلام آباد پہنچے۔

اتوار کو لاہور سے دفاع پاکستان کونسل نے حکومت کی جانب سے نیٹو سپلائی بحال کرنے کے خلاف لانگ مارچ کا آغاز کیا تھا اور شیڈول کے مطابق پیر کی رات کو اسلام آباد میں پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے ایک جلسہ ہو گا۔

وزیراعظم کے مشیر داخلہ رحمان ملک نے کہا کہ حکومت نے دفاع پاکستان کونسل کو اسلام آباد میں اجتماع کرنے کی اجازت دے رکھی ہے اور انھیں یہ حق ہے کہ وہ اسلام آباد میں اپنا احتجاج ریکارڈ درج کرائیں۔

Advertisement

Subscription

You can subscribe by e-mail to receive news updates and breaking stories.

————————Important———————–

Enter Analytics/Stat Tracking Code Here